Bushra Ejaz's Photo'

بشریٰ اعجاز

غزل 4

 

اشعار 5

مری اپنی اور اس کی آرزو میں فرق یہ تھا

مجھے بس وہ اسے سارا زمانہ چاہئے تھا

شب بھی ہے وہی ہم بھی وہی تم بھی وہی ہو

ہے اب کے مگر اپنی سزا اور طرح کی

اپنے سارے راستے اندر کی جانب موڑ کر

منزلوں کا اک نشاں باہر بنانا چاہئے

جب راکھ سے اٹھے گا کبھی عشق کا شعلہ

پھر پائے گی یہ خاک شفا اور طرح کی

مرے نکتہ داں ترا فہم اپنی مثال ہے

میں ہوں ایک سادہ سوال کوئی جواب دے

آڈیو 4

محبت میں کوئی صدمہ اٹھانا چاہئے تھا

مری رات میرا چراغ میری کتاب دے

انہیں ڈھونڈو

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

مزید دیکھیے