Fazl Tabish's Photo'

فضل تابش

1933 - 1995 | بھوپال, انڈیا

فضل تابش

غزل 13

نظم 6

اشعار 11

نہ کر شمار کہ ہر شے گنی نہیں جاتی

یہ زندگی ہے حسابوں سے جی نہیں جاتی

کمرے میں آ کے بیٹھ گئی دھوپ میز پر

بچوں نے کھلکھلا کے مجھے بھی جگا دیا

رات کو خواب بہت دیکھے ہیں

آج غم کل سے ذرا ہلکا ہے

وہی دو چار چہرے اجنبی سے

انہیں کو پھر سے دہرانا پڑے گا

سنتے ہیں کہ ان راہوں میں مجنوں اور فرہاد لٹے

لیکن اب آدھے رستے سے لوٹ کے واپس جائے کون

کتاب 6

 

آڈیو 9

اس کمرے میں خواب رکھے تھے کون یہاں پر آیا تھا

اسے معلوم ہے میں سرپھرا ہوں

جن خوابوں سے نیند اڑ جائے ایسے خواب سجائے کون

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

"بھوپال" کے مزید شعرا

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

بولیے