Ghulam Husain Sajid's Photo'

غلام حسین ساجد

1951 | ملتان, پاکستان

غزل 72

اشعار 34

رکا ہوں کس کے وہم میں مرے گمان میں نہیں

چراغ جل رہا ہے اور کوئی مکان میں نہیں

ہم مسافر ہیں گرد سفر ہیں مگر اے شب ہجر ہم کوئی بچے نہیں

جو ابھی آنسوؤں میں نہا کر گئے اور ابھی مسکراتے پلٹ آئیں گے

اگر ہے انسان کا مقدر خود اپنی مٹی کا رزق ہونا

تو پھر زمیں پر یہ آسماں کا وجود کس قہر کے لیے ہے

ایک خواہش ہے جو شاید عمر بھر پوری نہ ہو

ایک سپنے سے ہمیشہ پیار کرنا ہے مجھے

اس کے ہونے سے ہوئی ہے اپنے ہونے کی خبر

کوئی دشمن سے زیادہ لائق عزت نہیں

کتاب 1

ہست بود

شعری مجموعہ

2018

 

"ملتان" کے مزید شعرا

  • محسن نقوی محسن نقوی
  • عرش صدیقی عرش صدیقی
  • قمر رضا شہزاد قمر رضا شہزاد
  • ضیاء المصطفیٰ ترک ضیاء المصطفیٰ ترک
  • وقار خان وقار خان
  • حنا عنبرین حنا عنبرین
  • مبشر سعید مبشر سعید
  • رمزی آثم رمزی آثم
  • ارشد عباس ذکی ارشد عباس ذکی
  • اطہر ناسک اطہر ناسک