aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر
Hussain Majid's Photo'

حسین ماجد

1947 | دلی, انڈیا

حسین ماجد

غزل 4

 

اشعار 5

اس کا چہرہ اداس ہے ماجدؔ

آئینے پر نظر گئی ہوگی

ماجدؔ خدا کے واسطے کچھ دیر کے لیے

رو لینے دے اکیلا مجھے اپنے حال پر

کل جو میں نے جھانک کے دیکھا اس کی نیلی آنکھوں میں

اس کے دل کا زخم تو ماجدؔ ساگر سے بھی گہرا ہے

کہنے کی تو بات نہیں ہے لیکن کہنی پڑتی ہے

دل کی نگری میں مت جانا جو جائے پچھتائے

لوگوں نے آکاش سے اونچا جا کر تمغے پائے

ہم نے اپنا انتر کھوجا دیوانے کہلائے

کتاب 1

 

آڈیو 4

دھول_بھری آندھی میں سب کو چہرہ روشن رکھنا ہے

شام چھت پر اتر گئی ہوگی

طوفاں کوئی نظر میں نہ دریا ابال پر

Recitation

"دلی" کے مزید شعرا

Recitation

Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

GET YOUR PASS
بولیے