Ibn e Insha's Photo'

ابن انشا

1927 - 1978 | کراچی, پاکستان

ممتاز پاکستانی شاعر ، اپنی غزل ’ کل چودھویں کی رات تھی‘ کے لئے مشہور

ممتاز پاکستانی شاعر ، اپنی غزل ’ کل چودھویں کی رات تھی‘ کے لئے مشہور

غزل

اس شام وہ رخصت کا سماں یاد رہے_گا

نعمان شوق

انشاؔ_جی اٹھو اب کوچ کرو اس شہر میں جی کو لگانا کیا

نعمان شوق

جانے تو کیا ڈھونڈ رہا ہے بستی میں ویرانے میں

نعمان شوق

جب دہر کے غم سے اماں نہ ملی ہم لوگوں نے عشق ایجاد کیا

نعمان شوق

جلوہ_نمائی بے_پروائی ہاں یہی ریت جہاں کی ہے

نعمان شوق

دل ہجر کے درد سے بوجھل ہے اب آن ملو تو بہتر ہو

نعمان شوق

دیکھ ہماری دید کے کارن کیسا قابل_دید ہوا

نعمان شوق

رات کے خواب سنائیں کس کو رات کے خواب سہانے تھے

نعمان شوق

راز کہاں تک راز رہے_گا منظر_عام پہ آئے_گا

نعمان شوق

سب کو دل کے داغ دکھائے ایک تجھی کو دکھا نہ سکے

نعمان شوق

سنتے ہیں پھر چھپ چھپ ان کے گھر میں آتے جاتے ہو

نعمان شوق

شام_غم کی سحر نہیں ہوتی

نعمان شوق

کس کو پار اتارا تم نے کس کو پار اتارو_گے

نعمان شوق

کل چودھویں کی رات تھی شب بھر رہا چرچا ترا

نعمان شوق

انشاؔ_جی اٹھو اب کوچ کرو اس شہر میں جی کو لگانا کیا

امانت علی خان

نظم

ایک بار کہو تم میری ہو

فہد حسین

جھلسی سی اک بستی میں

نعمان شوق

فرض کرو

فہد حسین

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI