noImage

افتخار مغل

1961 | پاکستان

غزل 10

اشعار 14

کسی سبب سے اگر بولتا نہیں ہوں میں

تو یوں نہیں کہ تجھے سوچتا نہیں ہوں میں

ہم نے اس چہرے کو باندھا نہیں مہتاب مثال

ہم نے مہتاب کو اس رخ کے مماثل باندھا

خدا! صلہ دے دعا کا، محبتوں کے خدا

خدا! کسی نے کسی کے لیے دعا کی تھی

محبت اور عبادت میں فرق تو ہے ناں

سو چھین لی ہے تری دوستی محبت نے

گھیر لیتی ہے کوئی زلف، کوئی بوئے بدن

جان کر کوئی گرفتار نہیں ہوتا یار