جاوید لکھنوی

غزل 17

اشعار 13

کہیں ایسا نہ ہو مر جاؤں میں حسرت ہی حسرت میں

جو لینا ہو تو لے لو سب سے پہلے امتحاں میرا

  • شیئر کیجیے

شب وصل کیا جانے کیا یاد آیا

وہ کچھ آپ ہی آپ شرما رہے ہیں

  • شیئر کیجیے

تمہیں ہے نشہ جوانی کا ہم میں غفلت عشق

نہ اختیار میں تم ہو نہ اختیار میں ہم

  • شیئر کیجیے

تم پاس جو آئے کھو گئے ہم

جب تم نہ ملے تو جستجو کی

  • شیئر کیجیے

یہ اک بوسے پہ اتنی بحث یہ زیبا نہیں تم کو

نہیں ہے یاد مجھ کو خیر اچھا لے لیا ہوگا

  • شیئر کیجیے

"لکھنؤ" کے مزید شعرا

  • مصحفی غلام ہمدانی مصحفی غلام ہمدانی
  • جرأت قلندر بخش جرأت قلندر بخش
  • میر حسن میر حسن
  • حیدر علی آتش حیدر علی آتش
  • امداد علی بحر امداد علی بحر
  • عرفان صدیقی عرفان صدیقی
  • ولی اللہ محب ولی اللہ محب
  • یگانہ چنگیزی یگانہ چنگیزی
  • اسرار الحق مجاز اسرار الحق مجاز
  • وزیر علی صبا لکھنؤی وزیر علی صبا لکھنؤی