Kanval Ziai's Photo'

کنول ضیائی

1927 - 2012

کنول ضیائی

غزل 8

اشعار 4

ہمارا دور اندھیروں کا دور ہے لیکن

ہمارے دور کی مٹھی میں آفتاب بھی ہے

  • شیئر کیجیے

ہمارا خون کا رشتہ ہے سرحدوں کا نہیں

ہمارے خون میں گنگا بھی چناب بھی ہے

  • شیئر کیجیے

چند سانسوں کے لئے بکتی نہیں خودداری

زندگی ہاتھ پہ رکھی ہے اٹھا کر لے جا

  • شیئر کیجیے

جس میں چھپا ہوا ہو وجود گناہ و کفر

اس معتبر لباس پہ تیزاب ڈال دو

  • شیئر کیجیے

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

GET YOUR FREE PASS
بولیے