Moid Rasheedi's Photo'

معید رشیدی

1988 | علی گڑہ, انڈیا

ممتاز نسل کے نمود پذیر شاعر اور نقاد۔ ساہتیہ اکادمی ’یوا پرسکار‘ یافتہ

ممتاز نسل کے نمود پذیر شاعر اور نقاد۔ ساہتیہ اکادمی ’یوا پرسکار‘ یافتہ

معید رشیدی

غزل 36

اشعار 84

چند یادوں کے دیے تھوڑی تمنا کچھ خواب

زندگی تجھ سے زیادہ نہیں مانگا ہم نے

  • شیئر کیجیے

اس بار اجالوں نے مجھے گھیر لیا تھا

اس بار مری رات مرے ساتھ چلی ہے

مجھ کو پانے کی تمنا میں وہ غرقاب ہوا

میں نے ساحل کی تمنا میں اسے کھویا ہے

  • شیئر کیجیے

جو بچھڑ گیا وہ ملا نہیں یہ سوال تھا

جو ملا نہیں وہ بچھڑ گیا یہ کمال ہے

  • شیئر کیجیے

اے عقل نہیں آئیں گے باتوں میں تری ہم

نادان تھے نادان ہیں نادان رہیں گے

کتاب 5

 

تصویری شاعری 1

 

ویڈیو 11

This video is playing from YouTube

ویڈیو کا زمرہ
کلام شاعر بہ زبان شاعر
Aanokhon mein shab utar gai, Khwaabon ka silsila raha

معید رشیدی

Dekhle meri jaan kitna hai

معید رشیدی

Dil ye kehta hai ke haar kar dekhen

معید رشیدی

Ek hungama shab o roz bapa rehta hai

معید رشیدی

Faseel e shehar se kyun sab ke sab nikal aaye

معید رشیدی

Ishq mein lazzat e aazar nikal aati hai

معید رشیدی

Khala me dekhta rehta hai Kya pukarta hai

معید رشیدی

Main ek nadi hoon meri zaat ek samundar hai

معید رشیدی

Ye mojaza hai ki main raat kaat deta hoon

معید رشیدی

معید رشیدی

Moid Rashidi (from Delhi) is a Poet, critic and recipient of Sahitya Akademy Yuva Puruskar. Poet, critic and recipient of Sahitya Akademy Yuva Puruskar, Moid is well-regarded for his literary criticism in Urdu world. معید رشیدی

درون_ذات ہجوم_عذاب ٹھہرا ہے

معید رشیدی

آڈیو 3

درون_ذات ہجوم_عذاب ٹھہرا ہے

آج کچھ صورت_افلاک جدا لگتی ہے

میں کوئی دشت میں دیوار نہیں کر سکتا

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

 

"علی گڑہ" کے مزید شعرا

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

GET YOUR FREE PASS
بولیے