Mumtaz Mirza's Photo'

ممتاز میرزا

1929 - 1997 | دلی, انڈیا

ممتاز میرزا کے شعر

آگہی بھولنے دیتی نہیں ہستی کا مآل

ٹوٹ کے خواب بکھرتا ہے تو ہنس دیتے ہیں

رات کاٹے نہیں کٹتی ہے کسی صورت سے

دن تو دنیا کے بکھیڑوں میں گزر جاتا ہے

نہ جانے کب نگہ باغباں بدل جائے

ہر آن پھولوں کو دھڑکا لگا سا رہتا ہے

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

بولیے