noImage

ناظم سلطانپوری

1927 | کولکاتا, انڈیا

ناظم سلطانپوری کے شعر

کتنی ویران ہے گلی دل کی

دور تک کوئی نقش پا بھی نہیں

بڑے قلق کی بات ہے کہ تم اسے نہ پڑھ سکے

ہماری زندگی تو اک کھلی ہوئی کتاب تھی

اقتضا وقت کا جو چاہے کرا لے ورنہ

ہم نہ تھے غیر کے احسان اٹھانے والے

اپنی سنجیدہ طبیعت پہ تو اکثر ناظمؔ

فکر کے شوخ اجالے بھی گراں ہوتے ہیں

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI