Salik Lakhnavi's Photo'

سالک لکھنوی

1913 - 2013 | کولکاتا, انڈیا

سالک لکھنوی

غزل 5

 

اشعار 23

ساحل پہ قید لاکھوں سفینوں کے واسطے

میری شکستہ ناؤ ہے طوفاں لیے ہوئے

  • شیئر کیجیے

منزل نہ ملی کشمکش اہل نظر میں

اس بھیڑ سے میں اپنی نظر لے کے چلا ہوں

  • شیئر کیجیے

جو تیری بزم سے اٹھا وہ اس طرح اٹھا

کسی کی آنکھ میں آنسو کسی کے دامن میں

  • شیئر کیجیے

یہ بھی اک رات کٹ ہی جائے گی

صبح فردا کی منتظر ہے نگاہ

  • شیئر کیجیے

اپنی خودداری سلامت دل کا عالم کچھ سہی

جس جگہ سے اٹھ چکے ہیں اس جگہ پھر جائیں کیا

  • شیئر کیجیے

کتاب 29

متعلقہ شعرا

"کولکاتا" کے مزید شعرا

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

GET YOUR FREE PASS
بولیے