سیف الدین سیف کے 10 منتخب شعر

پاکستانی شاعر اور نغمہ نگار

کیا قیامت ہے ہجر کے دن بھی

زندگی میں شمار ہوتے ہیں

سیف الدین سیف

سیفؔ انداز بیاں رنگ بدل دیتا ہے

ورنہ دنیا میں کوئی بات نئی بات نہیں

سیف الدین سیف

آج کی رات وہ آئے ہیں بڑی دیر کے بعد

آج کی رات بڑی دیر کے بعد آئی ہے

سیف الدین سیف

شور دن کو نہیں سونے دیتا

شب کو سناٹا جگا دیتا ہے

سیف الدین سیف

تم کو بیگانے بھی اپناتے ہیں میں جانتا ہوں

میرے اپنے بھی پرائے ہیں تمہیں کیا معلوم

سیف الدین سیف

زندگی کس طرح کٹے گی سیفؔ

رات کٹتی نظر نہیں آتی

سیف الدین سیف

جس دن سے بھلا دیا ہے تو نے

آتا ہی نہیں خیال اپنا

سیف الدین سیف

ہمیں خبر ہے وہ مہمان ایک رات کا ہے

ہمارے پاس بھی سامان ایک رات کا ہے

سیف الدین سیف

تم نے دیوانہ بنایا مجھ کو

لوگ افسانہ بنائیں گے تمہیں

سیف الدین سیف

کیوں اجڑ جاتی ہے دل کی محفل

یہ دیا کون بجھا دیتا ہے

سیف الدین سیف