noImage

آغا حجو شرف

1812 - 1887

لکھنؤ کے اہم کلاسیکی شاعر، آتش کے شاگرد، شاہی خاندان کے قریب رہے، لکھنؤ پر لکھی اپنی طویل مثنوی ’افسانۂ لکھنؤ‘ کے لیے معروف

لکھنؤ کے اہم کلاسیکی شاعر، آتش کے شاگرد، شاہی خاندان کے قریب رہے، لکھنؤ پر لکھی اپنی طویل مثنوی ’افسانۂ لکھنؤ‘ کے لیے معروف

آغا حجو شرف

غزل 42

اشعار 25

شاخ گل جھوم کے گل زار میں سیدھی جو ہوئی

پھر گیا آنکھ میں نقشہ تری انگڑائی کا

  • شیئر کیجیے

عشق ہو جائے گا میری داستان عشق سے

رات بھر جاگا کرو گے اس کہانی کے لئے

  • شیئر کیجیے

لکھا ہے جو تقدیر میں ہوگا وہی اے دل

شرمندہ نہ کرنا مجھے تو دست دعا کا

  • شیئر کیجیے

بے وفا تم با وفا میں دیکھیے ہوتا ہے کیا

غیظ میں آنے کو تم ہو مجھ کو پیار آنے کو ہے

کبھی جو یار کو دیکھا تو خواب میں دیکھا

مری مراد بھی آئی تو مستعار آئی

  • شیئر کیجیے

کتاب 5

 

تصویری شاعری 1

 

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

بولیے