Font by Mehr Nastaliq Web

aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر
Deepak Purohit's Photo'

دیپک پروہت

1954 | جے پور, انڈیا

دیپک پروہت

غزل 4

 

اشعار 21

اچھا ہوا زبان خموشی نہ تم پڑھے

شکوے مرے وگرنہ رلاتے تمہیں بہت

  • شیئر کیجیے

کہ ہے مختصر داستاں عشق کی

گلے مل کے کوئی گلے پڑ گیا

  • شیئر کیجیے

وطن پرستی ہمارا مذہب ہیں جسم و جاں ملک کی امانت

کریں گے برپا قہر عدو پر رہے گا دائم وطن سلامت

  • شیئر کیجیے

تھا کبھی ان کی نگاہوں میں بلند اپنا مقام

اتنی اونچائی سے گر کر بھی کوئی بچتا ہے

  • شیئر کیجیے

یہ کیسی بد دعا دی ہے کسی نے

سمندر ہوں مگر کھارا ہوا ہوں

  • شیئر کیجیے

"جے پور" کے مزید شعرا

Recitation

Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

GET YOUR PASS
بولیے