Manzar Bhopali's Photo'

منظر بھوپالی

1959 | بھوپال, ہندوستان

منظر بھوپالی

غزل 14

اشعار 18

آنکھ بھر آئی کسی سے جو ملاقات ہوئی

خشک موسم تھا مگر ٹوٹ کے برسات ہوئی

باپ بوجھ ڈھوتا تھا کیا جہیز دے پاتا

اس لئے وہ شہزادی آج تک کنواری ہے

اب سمجھ لیتے ہیں میٹھے لفظ کی کڑواہٹیں

ہو گیا ہے زندگی کا تجربہ تھوڑا بہت

آپ ہی کی ہے عدالت آپ ہی منصف بھی ہیں

یہ تو کہیے آپ کے عیب و ہنر دیکھے گا کون

سفر کے بیچ یہ کیسا بدل گیا موسم

کہ پھر کسی نے کسی کی طرف نہیں دیکھا

کتاب 2

لہو رنگ موسم

 

1994

یہ صدی ہماری ہے

 

1991

 

مزید دیکھیے

متعلقہ شعرا

  • نواز دیوبندی نواز دیوبندی ہم عصر
  • نغیم اختر خادمی نغیم اختر خادمی ہم عصر
  • منور رانا منور رانا ہم عصر

"بھوپال" کے مزید شعرا

  • بشیر بدر بشیر بدر
  • کیف بھوپالی کیف بھوپالی
  • اختر سعید خان اختر سعید خان
  • منیر بھوپالی منیر بھوپالی
  • پروین کیف پروین کیف
  • ضیا فاروقی ضیا فاروقی
  • احمد کمال پروازی احمد کمال پروازی
  • بختیار ضیا بختیار ضیا
  • ڈاکٹر اعظم ڈاکٹر اعظم
  • رشمی صبا رشمی صبا