Mushir Jhanjhanvi's Photo'

مشیر جھنجھانوی

1926 - 1990 | دلی, ہندوستان

غزل 12

اشعار 2

مسرتوں نے تو چاہا تھا دل میں آ جائیں

ہجوم غم نے مگر ان کو راستہ نہ دیا

happiness did indeed in my heart seek place

but the crowd of sorrows did not move to give them space

  • شیئر کیجیے

وہ سن سکیں کوئی عنواں اسی لیے ہم نے

بدل بدل کے انہیں داستاں سنائی ہے

  • شیئر کیجیے
 

کتاب 2

انفاس غزل

 

1992

بے ساحل دریا

 

1998

 

آڈیو 9

تاب_نظر سے ان کو پریشاں کیے ہوئے

تیری چشم_ستم_ایجاد سے ڈر لگتا ہے

حوصلہ دل کا حوادث میں بڑھا رکھا ہے

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

مزید دیکھیے

متعلقہ شعرا

  • تمنا جمالی تمنا جمالی شاگرد
  • مظفر رزمی مظفر رزمی شاگرد
  • انور تاباں انور تاباں شاگرد
  • آثم پیرزادہ آثم پیرزادہ شاگرد
  • عفت زریں عفت زریں بیٹی

"دلی" کے مزید شعرا

  • شیخ ظہور الدین حاتم شیخ ظہور الدین حاتم
  • فرحت احساس فرحت احساس
  • داغؔ دہلوی داغؔ دہلوی
  • بیخود دہلوی بیخود دہلوی
  • آبرو شاہ مبارک آبرو شاہ مبارک
  • شیخ ابراہیم ذوقؔ شیخ ابراہیم ذوقؔ
  • شاہ نصیر شاہ نصیر
  • حسرتؔ موہانی حسرتؔ موہانی
  • تاباں عبد الحی تاباں عبد الحی
  • مظہر امام مظہر امام