aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر
Muzaffar Ali Aseer's Photo'

مظفر علی اسیر

1800 - 1882 | لکھنؤ, انڈیا

مظفر علی اسیر

غزل 11

اشعار 5

واہ کیا اس گل بدن کا شوخ ہے رنگ بدن

جامۂ آبی اگر پہنا گلابی ہو گیا

  • شیئر کیجیے

مغفرت کی نظر آتی ہے بس اتنی صورت

ہم گناہوں سے پشیمان رہا کرتے ہیں

  • شیئر کیجیے

کعبے چلتا ہوں پر اتنا تو بتا

مے کدہ کوئی ہے زاہد راہ میں

  • شیئر کیجیے

رونق گلشن جو وہ رند شرابی ہو گیا

پھول ساغر بن گیا غنچہ گلابی ہو گیا

  • شیئر کیجیے

نظارۂ قاتل نے کیا محو یہ ہم کو

گردن پہ چمکتی ہوئی شمشیر نہ سوجھی

  • شیئر کیجیے

کتاب 20

متعلقہ شعرا

"لکھنؤ" کے مزید شعرا

Recitation

Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

GET YOUR PASS
بولیے