راشد آذر

غزل 21

اشعار 2

دیکھنے والے یوں تو بہت دیکھے ہیں لیکن

مر جاؤں جو کوئی تیری ادا سے دیکھے

جن ہاتھوں سے بٹتی خیراتیں دیکھی تھیں

ان آنکھوں سے ان ہاتھوں میں کاسے دیکھے

 

کتاب 10

آب دیدہ

 

1974

اندوختہ

 

1997

جمع و خرچ وفا

 

1990

خاک انا

 

1979

میر کی غزل گوئی

ایک جائزہ

1991

نقش آذر

 

1963

قرض جاں

 

2003

صدائے تیشہ

 

1971

صدائے تیشہ

 

1971

صدائے تیشہ

 

1971

 

آڈیو 16

تمہارا نام لے کر در_بہ_در ہوتا رہوں_گا

حسن ہو عشق کا خوگر مجھے رہنے دیتے

سمجھ رہا ہے تری ہر خطا کا حامی مجھے

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

مزید دیکھیے

"حیدر آباد" کے مزید شعرا

  • امیر مینائی امیر مینائی
  • جلیل مانک پوری جلیل مانک پوری
  • رؤف رحیم رؤف رحیم
  • ولی عزلت ولی عزلت
  • مخدومؔ محی الدین مخدومؔ محی الدین
  • شفیق فاطمہ شعریٰ شفیق فاطمہ شعریٰ
  • خورشید احمد جامی خورشید احمد جامی
  • خواجہ شوق خواجہ شوق
  • شاہد صدیقی شاہد صدیقی
  • ریاست علی تاج ریاست علی تاج