aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر
Saleem Betab's Photo'

سلیم بیتاب

1940 - 1974 | فیصل آباد, پاکستان

سلیم بیتاب کے اشعار

میں نے تو یونہی راکھ میں پھیری تھیں انگلیاں

دیکھا جو غور سے تری تصویر بن گئی

سرما کی رات ریل کا ڈبہ اداسیاں

لمبا سفر ہے اور ترا ساتھ بھی نہیں

وہ کون ہے جو مرے ساتھ ساتھ چلتا ہے

یہ دیکھنے کو کئی بار رک گیا ہوں میں

اس ملک میں بھی لوگ قیامت کے ہیں منکر

جس ملک کے ہر شہر میں اک حشر بپا ہے

بیتابؔ لڑکیوں کی جسارت تو دیکھیے

خود کو شمار کرتی ہیں سب اپسراؤں میں

Recitation

Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

GET YOUR PASS
بولیے