Zafar Moradabadi's Photo'

ظفر مرادآبادی

1951 | دلی, ہندوستان

غزل 10

اشعار 7

بڑھے کچھ اور کسی التجا سے کم نہ ہوئے

مرے حریف تمہاری دعا سے کم نہ ہوئے

خوش گماں ہر آسرا بے آسرا ثابت ہوا

زندگی تجھ سے تعلق کھوکھلا ثابت ہوا

یوں ہی کسی کی کوئی بندگی نہیں کرتا

بتوں کے چہروں پہ تیور خدا کے رکھے تھے

مری امید کا سورج کہ تیری آس کا چاند

دیے تمام ہی رخ پر ہوا کے رکھے تھے

کارواں سے جو بھی بچھڑا گرد صحرا ہو گیا

ٹوٹ کر پتے کب اپنی شاخ پر واپس ہوئے

کتاب 7

آئینہ فن و شخصیت میں وقار مانوی

 

2010

ادبی قلم کار

 

2008

ادبی شخصیات

 

2007

اشک لہجے

 

2009

میں ہوں شاعر

 

2014

وقار غزل

 

2012

 

"دلی" کے مزید شعرا

  • مرزا غالب مرزا غالب
  • داغؔ دہلوی داغؔ دہلوی
  • شاہ نصیر شاہ نصیر
  • حسرتؔ موہانی حسرتؔ موہانی
  • آبرو شاہ مبارک آبرو شاہ مبارک
  • تاباں عبد الحی تاباں عبد الحی
  • خواجہ میر درد خواجہ میر درد
  • مومن خاں مومن مومن خاں مومن
  • بیخود دہلوی بیخود دہلوی
  • انس خان انس خان