Anjum Azmi's Photo'

انجم اعظمی

1941 - 1990 | کراچی, پاکستان

پاکستانی شاعر اور مصنف، ’لب ورخسار‘ کے نام سے محبت کی نظموں کا مجموعہ شائع ہوا، ’شاعری کی زبان‘ ان کے تنقیدی مضامین کا مجموعہ ہے

پاکستانی شاعر اور مصنف، ’لب ورخسار‘ کے نام سے محبت کی نظموں کا مجموعہ شائع ہوا، ’شاعری کی زبان‘ ان کے تنقیدی مضامین کا مجموعہ ہے

34
Favorite

باعتبار

تجھ سے پردہ نہیں مرے غم کا

تو مری زندگی کا محرم ہے

بٹھا کے سامنے تم کو بہار میں پی ہے

تمہارے رند نے توبہ بھی روبرو کر لی

کوئی تو خیر کا پہلو بھی نکلے

اکیلا کس طرح یہ شر رہے گا

خاک نے کتنے بد اطوار کئے ہیں پیدا

یہ نہ ہوتے تو اسی خاک سے کیا کیا ہوتا

خالی بھی تو کر خانۂ دل دنیا سے

اس گھر میں مری جان خدا آئے گا

میری دنیا میں ابھی رقص شرر ہوتا ہے

جو بھی ہوتا ہے بہ انداز دگر ہوتا ہے

آؤ خوش ہو کے پیو کچھ نہ کہو واعظ کو

میکدے میں وہ تماشائی ہے کچھ اور نہیں

دل نہ کعبہ ہے نے کلیسا ہے

تیرا گھر ہے حریم مریم ہے

نکلو بھی کبھی سود و زیاں سے ورنہ

کوچے میں ترے کون بھلا آئے گا

اب نہ وہ جوش وفا ہے نہ وہ انداز طلب

اب بھی لیکن ترے کوچے سے گزر ہوتا ہے

غلط ہے جذبۂ دل پر نہیں کوئی الزام

خوشی ملی نہ ہمیں جب تو غم کی خو کر لی

علاج اس کا گزر جانا ہے جاں سے

گزر جانے کا جاں سے ڈر رہے گا

کیوں ہوا مجھ کو عنایت کی نظر کا سودا

آج رسوائی ہی رسوائی ہے کچھ اور نہیں