Inder Saraazi's Photo'

اندر سرازی

1990 | ڈوڈہ, انڈیا

اندر سرازی

غزل 4

 

اشعار 17

دکھ اداسی ملال غم کے سوا

اور بھی ہے کوئی مکان میں کیا

  • شیئر کیجیے

جس کا ڈر تھا وہی ہوا یارو

وہ فقط ہم سے ہی خفا نکلا

  • شیئر کیجیے

ساون کی اس رم جھم میں

بھیگ رہا ہے تنہا چاند

  • شیئر کیجیے

بڑی مشکل سے بہلایا تھا خود کو

اچانک یاد تیری آ گئی پھر

  • شیئر کیجیے

کتنا پیارا لگتا ہے

ہوتا ہے جب پورا چاند

  • شیئر کیجیے

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

GET YOUR FREE PASS
بولیے