Mukhtar Siddiqui's Photo'

مختار صدیقی

1919 - 1972

مختار صدیقی

غزل 13

اشعار 11

میری آنکھوں ہی میں تھے ان کہے پہلو اس کے

وہ جو اک بات سنی میری زبانی تم نے

عبرت آباد بھی دل ہوتے ہیں انسانوں کے

داد ملتی بھی نہیں خوں شدہ ارمانوں کی

  • شیئر کیجیے

بستیاں کیسے نہ ممنون ہوں دیوانوں کی

وسعتیں ان میں وہی لاتے ہیں ویرانوں کی

  • شیئر کیجیے

کیا کیا پکاریں سسکتی دیکھیں لفظوں کے زندانوں میں

چپ ہی کی تلقین کرے ہے غیرت مند ضمیر ہمیں

پھیرا بہار کا تو برس دو برس میں ہے

یہ چال ہے خزاں کی جو رک رک کے تھم گئی

کتاب 2

جینے کی اہمیت

 

 

منزل شب

 

1955

سی حرفی

 

 

 

ویڈیو 3

This video is playing from YouTube

ویڈیو کا زمرہ
کلام شاعر بہ زبان شاعر

مختار صدیقی

مختار صدیقی

نور_سحر کہاں ہے اگر شام_غم گئی

مختار صدیقی

مزید دیکھیے

متعلقہ شعرا

  • کشور ناہید کشور ناہید شاگرد