Nazeer Akbarabadi's Photo'

نظیر اکبرآبادی

1735 - 1830 | آگرہ, انڈیا

میر تقی میر کے ہم عصر ممتاز شاعر، جنہوں نے ہندوستانی ثقافت اور تہواروں پر نظمیں لکھیں ، ہولی ، دیوالی اور دیگر موضوعات پر نظموں کے لئے مشہور

میر تقی میر کے ہم عصر ممتاز شاعر، جنہوں نے ہندوستانی ثقافت اور تہواروں پر نظمیں لکھیں ، ہولی ، دیوالی اور دیگر موضوعات پر نظموں کے لئے مشہور

نظیر اکبرآبادی

غزل 231

نظم 29

اشعار 107

جدا کسی سے کسی کا غرض حبیب نہ ہو

یہ داغ وہ ہے کہ دشمن کو بھی نصیب نہ ہو

  • شیئر کیجیے

تھا ارادہ تری فریاد کریں حاکم سے

وہ بھی اے شوخ ترا چاہنے والا نکلا

  • شیئر کیجیے

مے پی کے جو گرتا ہے تو لیتے ہیں اسے تھام

نظروں سے گرا جو اسے پھر کس نے سنبھالا

  • شیئر کیجیے

تھے ہم تو خود پسند بہت لیکن عشق میں

اب ہے وہی پسند جو ہو یار کو پسند

  • شیئر کیجیے

کیوں نہیں لیتا ہماری تو خبر اے بے خبر

کیا ترے عاشق ہوئے تھے درد و غم کھانے کو ہم

رباعی 22

کتاب 55

تصویری شاعری 2

 

ویڈیو 19

This video is playing from YouTube

ویڈیو کا زمرہ
دیگر

سیان چودھری

"Bahr-e-Taweel"

Zia Mohiuddin reads "Bahr-e-Taweel" nazeer akbarabadi ka likha hua ek sher hai jo be-inteha lamba hai. Ziya sahib ki khubsurat aawaaz mein us ka lutf dugna ho jaata hai. ضیا محی الدین

Diwali Nazm

نامعلوم

Khoon rez karishma naaz sitam

چھایا گانگولی

Khoonrez Karishma Naaz Sitam

چھایا گانگولی

ہم اشک_غم ہیں اگر تھم رہے رہے نہ رہے

اقبال بانو

آدمی_نامہ

دنیا میں پادشہ ہے سو ہے وہ بھی آدمی حبیب تنویر

آدمی_نامہ

دنیا میں پادشہ ہے سو ہے وہ بھی آدمی

آدمی_نامہ

دنیا میں پادشہ ہے سو ہے وہ بھی آدمی مہدی ظہیر

بنجارہ_نامہ

ٹک حرص_و_ہوا کو چھوڑ میاں مت دیس بدیس پھرے مارا مکیش

بنجارہ_نامہ

ٹک حرص_و_ہوا کو چھوڑ میاں مت دیس بدیس پھرے مارا مہدی ظہیر

بنجارہ_نامہ

ٹک حرص_و_ہوا کو چھوڑ میاں مت دیس بدیس پھرے مارا نامعلوم

بنجارہ_نامہ

ٹک حرص_و_ہوا کو چھوڑ میاں مت دیس بدیس پھرے مارا نامعلوم

تن پر اس کے سیم فدا اور منہ پر مہ دیوانہ ہے

سیان چودھری

دور سے آئے تھے ساقی سن کے مے_خانے کو ہم

نرملا دیوی

روٹیاں

جب آدمی کے پیٹ میں آتی ہیں روٹیاں جسوندر سنگھ

ہم اشک_غم ہیں اگر تھم رہے رہے نہ رہے

اقبال بانو

ہولی

آ دھمکے عیش و طرب کیا کیا جب حسن دکھایا ہولی نے نامعلوم

ہولی کی بہاریں

جب پھاگن رنگ جھمکتے ہوں تب دیکھ بہاریں ہولی کی چھایا گانگولی

آڈیو 8

اس کے شرار_حسن نے شعلہ جو اک دکھا دیا

بھرے ہیں اس پری میں اب تو یارو سر_بسر موتی

رخ پری چشم پری زلف پری آن پری

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

متعلقہ بلاگ

 

"آگرہ" کے مزید شعرا

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

GET YOUR FREE PASS
بولیے