Parvez Shahidi's Photo'

پرویز شاہدی

1910 - 1968 | کولکاتا, انڈیا

پرویز شاہدی

غزل 17

نظم 5

 

اشعار 8

یاد ہیں آپ کے توڑے ہوئے پیماں ہم کو

کیجئے اور نہ شرمندۂ احساں ہم کو

  • شیئر کیجیے

نہ جانے کہہ گئے کیا آپ مسکرانے میں

ہے دل کو ناز کہ جان آ گئی فسانے میں

  • شیئر کیجیے

ابھی سے صبح گلشن رقص فرما ہے نگاہوں میں

ابھی پوری نقاب الٹی نہیں ہے شام صحرا نے

  • شیئر کیجیے

گیت ہریالی کے گائیں گے سسکتے ہوئے کھیت

محنت اب غارت جاگیر تک آ پہنچی ہے

  • شیئر کیجیے

مری زندگی کی زینت ہوئی آفت و بلا سے

میں وہ زلف خم بہ خم ہوں جو سنور گئی ہوا سے

  • شیئر کیجیے

قطعہ 2

 

رباعی 19

کتاب 22

متعلقہ شعرا

"کولکاتا" کے مزید شعرا

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI