Faragh Rohvi's Photo'

فراغ روہوی

1956 - 2020 | کولکاتا, ہندوستان

غزل 18

اشعار 17

ہمارے تن پہ کوئی قیمتی قبا نہ سہی

غزل کو اپنی مگر خوش لباس رکھتے ہیں

اک دن وہ میرے عیب گنانے لگا فراغؔ

جب خود ہی تھک گیا تو مجھے سوچنا پڑا

خوب نبھے گی ہم دونوں میں میرے جیسا تو بھی ہے

تھوڑا جھوٹا میں بھی ٹھہرا تھوڑا جھوٹا تو بھی ہے

دماغ اہل محبت کا ساتھ دیتا نہیں

اسے کہو کہ وہ دل کے کہے میں آ جائے

کھلی نہ مجھ پہ بھی دیوانگی مری برسوں

مرے جنون کی شہرت ترے بیاں سے ہوئی

دوہا 3

کیسے اپنے پیار کے سپنے ہوں ساکار

تیرے میرے بیچ ہے مذہب کی دیوار

  • شیئر کیجیے

بھول گئے ہر واقعہ بس اتنا ہے یاد

مال و زر پر تھی کھڑی رشتوں کی بنیاد

  • شیئر کیجیے

نفرت کے سنسار میں کھیلیں اب یہ کھیل

اک اک انساں جوڑ کے بن جائیں ہم ریل

  • شیئر کیجیے
 

کتاب 8

چھیّاں چھیّاں

 

1999

ہم بچے ہیں پڑھنے والے

 

2012

حمد کا عالمی انتخاب

 

2019

جنوں خواب

 

2013

انتظار کر

 

2002

ترکش

شمارہ نمبر۔012

2012

ترکش

جاوید دانش نمبر : شمارہ نمبر۔001

2005

ترکش

007شمارہ نمبر ۔

2004

 

مزید دیکھیے

متعلقہ شعرا

  • قیصر شمیم قیصر شمیم استاد

"کولکاتا" کے مزید شعرا

  • وحشتؔ رضا علی کلکتوی وحشتؔ رضا علی کلکتوی
  • اعزاز افصل اعزاز افصل
  • عباس علی خاں بیخود عباس علی خاں بیخود
  • شہناز نبی شہناز نبی
  • عین رشید عین رشید
  • آرزو سہارنپوری آرزو سہارنپوری
  • حشمت کمال پاشا حشمت کمال پاشا
  • جرم محمد آبادی جرم محمد آبادی
  • ف س اعجاز ف س اعجاز
  • معصوم شرقی معصوم شرقی