تصویری شاعری 1

سنی ہر بات اپنے رہنما کی یہی اک بھول ہم نے بارہا کی ہوئی جو زندگی سے اتفاقاً وہی بھول اس نے پھر اک مرتبہ کی مجھی میں گونجتی ہیں سب صدائیں مگر پھر بھی ہے خاموشی بلا کی ہر اک کردار میں ڈھلنے کی چاہت متانت دیکھیے بہروپیا کی ازل کے پیشتر بھی کچھ تو ہوگا کہاں پھر حد ملے_گی ابتدا کی تلاطم ہیں مرے میری ہیں لہریں مجھے کیوں جستجو ہو ناخدا کی ہمارے ساتھ ہو کر بھی نہیں ہے شکایت کیا کریں اس گمشدہ کی ہر اک آہٹ تری آمد کا دھوکہ کبھی تو لاج رکھ لے اس خطا کی سراپا ہائے اس نازک بدن کا کوئی تصویر جیسے اپسرا کی

 

شعرا کے مزید "لکھنؤ"

  • گلزار گلزار
  • سرفراز خالد سرفراز خالد
  • ضیا ضمیر ضیا ضمیر
  • سوپنل تیواری سوپنل تیواری
  • وکاس شرما راز وکاس شرما راز
  • منیش شکلا منیش شکلا
  • شکیل جمالی شکیل جمالی
  • پاپولر میرٹھی پاپولر میرٹھی
  • فاروق انجینئر فاروق انجینئر
  • امیر امام امیر امام