غزل 6

اشعار 47

رونق بزم نہیں تھا کوئی تجھ سے پہلے

رونق بزم ترے بعد نہیں ہے کوئی

  • شیئر کیجیے

اسی کے خواب تھے سارے اسی کو سونپ دیئے

سو وہ بھی جیت گیا اور میں بھی ہارا نہیں

  • شیئر کیجیے

دل جو ٹوٹا ہے تو پھر یاد نہیں ہے کوئی

اس خرابے میں اب آباد نہیں ہے کوئی

  • شیئر کیجیے

اس سے کہہ دو کہ مجھے اس سے نہیں ملنا ہے

وہ ہے مصروف تو بے کار نہیں ہوں میں بھی

  • شیئر کیجیے

اسی سے پوچھو اسے نیند کیوں نہیں آتی

یہ اس کا کام نہیں ہے تو میرا کام ہے کیا

  • شیئر کیجیے

مزید دیکھیے

متعلقہ شعرا

  • خالد مبشر خالد مبشر ہم عصر

"دلی" کے مزید شعرا

  • راجیندر منچندا بانی راجیندر منچندا بانی
  • انیس الرحمان انیس الرحمان
  • آبرو شاہ مبارک آبرو شاہ مبارک
  • شاہ نصیر شاہ نصیر
  • حسرتؔ موہانی حسرتؔ موہانی
  • تاباں عبد الحی تاباں عبد الحی
  • بیخود دہلوی بیخود دہلوی
  • انس خان انس خان
  • بہادر شاہ ظفر بہادر شاہ ظفر
  • محمد رفیع سودا محمد رفیع سودا