ظفر عجمی

غزل 8

اشعار 10

یہ الگ بات کہ وہ دل سے کسی اور کا تھا

بات تو اس نے ہماری بھی بظاہر رکھی

بجا ہے زندگی سے ہم بہت رہے ناراض

مگر بتاؤ خفا تم سے بھی کبھو ہوئے ہیں

کسی کے راستے کی خاک میں پڑے ہیں ظفرؔ

متاع عمر یہی عاجزی نکلتی ہے

  • شیئر کیجیے

سب بڑے زعم سے آئے تھے نئے صورت گر

سب کے دامن سے وہی خواب پرانے نکلے

نا خدا چھوڑ گئے بیچ بھنور میں تو ظفرؔ

ایک تنکے کے سہارے نے کہا بسم اللہ

"فیصل آباد" کے مزید شعرا

  • انجم سلیمی انجم سلیمی
  • سلیم بیتاب سلیم بیتاب
  • ریاض مجید ریاض مجید
  • جہانزیب ساحر جہانزیب ساحر
  • نصرت صدیقی نصرت صدیقی
  • ارشد عزیز ارشد عزیز
  • مرزا فرحان عارض مرزا فرحان عارض
  • مسعودالرحمن مسعود مسعودالرحمن مسعود
  • بابر علی اسد بابر علی اسد
  • شاہد اشرف شاہد اشرف