فلمی اشعار پر تصویری شاعری

مندرجہ بالا عنوان کے

تحت ہم نے جو اشعار جمع کئے ہیں ان کا استعمال فلموں میں ہوا ہے اور اسی وجہ سے ان میں سے بیشتر اشعار زبان زد خاص وعام ہیں اور ہماری زندگی کے روزمرہ کے معاملات کو گھیرتے ہیں ۔ امید ہے آپ کو یہ انتخاب پسند آئے گا ۔

عمر دراز مانگ کے لائی تھی چار دن

صبح ہوتی ہے شام ہوتی ہے

سنا ہے لوگ اسے آنکھ بھر کے دیکھتے ہیں

زندگی جب بھی تری بزم میں لاتی ہے ہمیں

کوئی کیوں کسی کا لبھائے دل کوئی کیا کسی سے لگائے دل (ردیف .. ے)

ہم لبوں سے کہہ نہ پائے ان سے حال دل کبھی (ردیف .. ے)

صبح ہوتی ہے شام ہوتی ہے

اور بھی دکھ ہیں زمانے میں محبت کے سوا

سرخ رو ہوتا ہے انساں ٹھوکریں کھانے کے بعد

ہم ہیں راہی پیار کے ہم سے کچھ نہ بولئے

ہم لبوں سے کہہ نہ پائے ان سے حال دل کبھی (ردیف .. ے)

آوارہ

آوارہ

کوئی کیوں کسی کا لبھائے دل کوئی کیا کسی سے لگائے دل (ردیف .. ے)

ہوش والوں کو خبر کیا بے خودی کیا چیز ہے

سیر کر دنیا کی غافل زندگانی پھر کہاں

کسی کی یاد میں دنیا کو ہیں بھلائے ہوئے

کسی کی یاد میں دنیا کو ہیں بھلائے ہوئے

آج جانے کی ضد نہ کرو

آوارہ

آوارہ

ہزاروں سال نرگس اپنی بے نوری پہ روتی ہے (ردیف .. ا)

سیر کر دنیا کی غافل زندگانی پھر کہاں

ہم لبوں سے کہہ نہ پائے ان سے حال دل کبھی (ردیف .. ے)

بولیے