Akbar Hyderabadi's Photo'

اکبر حیدرآبادی

1925 - | لندن, برطانیہ

غزل 19

نظم 9

اشعار 21

بے سال و سن زمانوں میں پھیلے ہوئے ہیں ہم

بے رنگ و نسل نام میں تو بھی ہے میں بھی ہوں

یہی سوچ کر اکتفا چار پر کر گئے شیخ جی

ملیں گی وہاں ان کو حور اور پریاں وغیرہ وغیرہ

  • شیئر کیجیے

مری شکست بھی تھی میری ذات سے منسوب

کہ میری فکر کا ہر فیصلہ شعوری تھا

رباعی 11

ای- کتاب 3

آوازوں کا شہر

 

1988

خط رہ گزر

 

1971

قرض ماہ و سال کے

 

2000

 

آڈیو 5

آنکھ میں آنسو کا اور دل میں لہو کا کال ہے

بس اک تسلسل_تکرار_قرب_و_دوری تھا

جب صبح کی دہلیز پہ بازار لگے_گا

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

شعرا کے مزید "لندن"

  • ہلال فرید ہلال فرید
  • شہرت بخاری شہرت بخاری
  • سلطان غوری سلطان غوری
  • سید عاشور کاظمی سید عاشور کاظمی
  • اختر ضیائی اختر ضیائی
  • اطہر راز اطہر راز
  • خالد یوسف خالد یوسف
  • میر بشیر میر بشیر
  • شبانہ یوسف شبانہ یوسف
  • یاور عباس یاور عباس

Added to your favorites

Removed from your favorites