Akhlaque Bandvi's Photo'

اخلاق بندوی

1964 | جون پور, ہندوستان

اخلاق بندوی

غزل 21

اشعار 4

کیا تجھے علم نہیں تیری رضا کی خاطر

میں نے کس کس کو زمانے میں خفا رکھا ہے

کسی کے لمس کی تاثیر ہے کہ برسوں بعد

مری کتابوں میں اب بھی گلاب جاگتے ہیں

عمر لگ جاتی ہے اک گھر کو بنانے میں ہمیں

مکڑیاں روز ہی بن لیتی ہیں جالے کیسے

زمانے سے محبت کا ابھی تک

یہ حاصل ہے کہ کچھ حاصل نہیں ہے

کتاب 1

لمس

 

2017

 

"جون پور" کے مزید شعرا

  • حفیظ جونپوری حفیظ جونپوری
  • وامق جونپوری وامق جونپوری
  • اصغر مہدی ہوش اصغر مہدی ہوش
  • نرمل ندیم نرمل ندیم
  • شوکت پردیسی شوکت پردیسی
  • رضا جونپوری رضا جونپوری
  • شفیق جونپوری شفیق جونپوری
  • فیض راحیل خان فیض راحیل خان
  • عبرت مچھلی شہری عبرت مچھلی شہری
  • شفا کجگاؤنوی شفا کجگاؤنوی