noImage

انیس احمد انیس

1940

غزل 7

اشعار 9

اب غم کا کوئی غم نہ خوشی کی خوشی مجھے

آخر کو راس آ ہی گئی زندگی مجھے

گوارا ہی نہ تھی جن کو جدائی میری دم بھر کی

انہیں سے آج میری شکل پہچانی نہیں جاتی

کبھی اک بار ہولے سے پکارا تھا مجھے تم نے

کسی کی مجھ سے اب آواز پہچانی نہیں جاتی

طواف ماہ کرنا اور خلا میں سانس لینا کیا

بھروسہ جب نہیں انسان کو انسان کے دل پر

یا رب مرے گناہ کیا اور احتساب کیا

کچھ دی نہیں ہے خضر سی عمر رواں مجھے

کتاب 1

روزن لفظ

 

1993

 

مزید دیکھیے