noImage

جنید حزیں لاری

1933 | بنارس, ہندوستان

غزل 3

 

اشعار 15

دیکھا نہیں وہ چاند سا چہرا کئی دن سے

تاریک نظر آتی ہے دنیا کئی دن سے

  • شیئر کیجیے

قطرہ نہ ہو تو بحر نہ آئے وجود میں

پانی کی ایک بوند سمندر سے کم نہیں

  • شیئر کیجیے

وہ سادگی میں بھی ہے عجب دل کشی لئے

اس واسطے ہم اس کی تمنا میں جی لئے

  • شیئر کیجیے

کبھی اس راہ سے گزرے وہ شاید

گلی کے موڑ پر تنہا کھڑا ہوں

  • شیئر کیجیے

عشق ہے جی کا زیاں عشق میں رکھا کیا ہے

دل برباد بتا تیری تمنا کیا ہے

  • شیئر کیجیے

کتاب 1

حرف و نوا

 

1985

 

تصویری شاعری 1

عشق ہے جی کا زیاں عشق میں رکھا کیا ہے دل_برباد بتا تیری تمنا کیا ہے

 

مزید دیکھیے

"بنارس" کے مزید شعرا

  • بھارتیندو ہریش چندر بھارتیندو ہریش چندر
  • کبیر اجمل کبیر اجمل
  • نذیر بنارسی نذیر بنارسی
  • ڈاکٹر بھاؤنا شریواستو ڈاکٹر بھاؤنا شریواستو
  • سراج العارفین سراج سراج العارفین سراج
  • دیپک پرجاپتی خالص دیپک پرجاپتی خالص
  • انیتا موہن انیتا موہن
  • محمود عالم محمود عالم
  • انش پرتاپ سنگھ غافل انش پرتاپ سنگھ غافل
  • عامر سوقی عامر سوقی