Khwaja Razi Haidar's Photo'

خواجہ رضی حیدر

1946 | کراچی, پاکستان

ہمعصر پاکستانی شاعر

ہمعصر پاکستانی شاعر

خواجہ رضی حیدر

غزل 15

اشعار 5

نہیں احساس تم کو رائیگانی کا ہماری

سہولت سے تمہیں شاید میسر ہو گئے ہیں

گزری جو رہ گزر میں اسے درگزر کیا

اور پھر یہ تذکرہ کبھی جا کر نہ گھر کیا

کب تک اے باد صبا تجھ سے توقع رکھوں

دل تمنا کا شجر ہے تو ہرا ہو بھی چکا

  • شیئر کیجیے

میں نے پوچھا کہ کوئی دل زدگاں کی ہے مثال

کس توقف سے کہا اس نے کہ ہاں تم اور میں

آئینے میں اور آب رواں میں تھا ترا عکس

شاید کہ مرا دیدۂ تر تیری طرف تھا

کتاب 3

 

ویڈیو 5

This video is playing from YouTube

ویڈیو کا زمرہ
کلام شاعر بہ زبان شاعر

خواجہ رضی حیدر

چراغ_بزم تری منصبی ہے کتنی دیر

خواجہ رضی حیدر

ایسا کر سکتے تھے کیا کوئی گماں تم اور میں

خواجہ رضی حیدر

سرنگوں دل کی طرح دست_دعا ہو بھی چکے

خواجہ رضی حیدر

وقت عجیب آ گیا منصب_و_جاہ کے لیے

خواجہ رضی حیدر

متعلقہ شعرا

"کراچی" کے مزید شعرا

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

بولیے