Krishn Bihari Noor's Photo'

کرشن بہاری نور

1926 - 2003 | لکھنؤ, ہندوستان

مقبول عام شاعر، لکھنوی زبان و تہذیب کے نمائندے

مقبول عام شاعر، لکھنوی زبان و تہذیب کے نمائندے

غزل 29

اشعار 13

میں تو غزل سنا کے اکیلا کھڑا رہا

سب اپنے اپنے چاہنے والوں میں کھو گئے

  • شیئر کیجیے

آئنہ یہ تو بتاتا ہے کہ میں کیا ہوں مگر

آئنہ اس پہ ہے خاموش کہ کیا ہے مجھ میں

my physical external form, the mirror does reflect

but it does not revel my innermost aspect

my physical external form, the mirror does reflect

but it does not revel my innermost aspect

  • شیئر کیجیے

کیسی عجیب شرط ہے دیدار کے لیے

آنکھیں جو بند ہوں تو وہ جلوہ دکھائی دے

کتاب 5

دھوپ دھوپ

 

1979

دکھ سکھ

 

1977

تجلیٔ نور

 

2004

تپسیا

 

1992

 

ویڈیو 9

This video is playing from YouTube

ویڈیو کا زمرہ
کلام شاعر بہ زبان شاعر
Nazar mila na sake us se us nigaah ke baad

کرشن بہاری نور

Reading his poetry at a mushaira

کرشن بہاری نور

Wo kya hai, kaun hai, kaise koi nazar jaane

کرشن بہاری نور

اک غزل اس پہ لکھوں دل کا تقاضا ہے بہت

کرشن بہاری نور

زندگی سے بڑی سزا ہی نہیں

کرشن بہاری نور

متعلقہ شعرا

  • فضل لکھنوی فضل لکھنوی استاد
  • معراج فیض آبادی معراج فیض آبادی ہم عصر
  • گووند گلشن گووند گلشن شاگرد

"لکھنؤ" کے مزید شعرا

  • والی آسی والی آسی
  • عادل لکھنوی عادل لکھنوی
  • گوپی ناتھ امن گوپی ناتھ امن
  • عزیز بانو داراب وفا عزیز بانو داراب وفا
  • اخگر مشتاق رحیم آبادی اخگر مشتاق رحیم آبادی
  • نازش پرتاپ گڑھی نازش پرتاپ گڑھی
  • ملک زادہ منظور احمد ملک زادہ منظور احمد
  • عاجز ماتوی عاجز ماتوی
  • بشیر فاروق بشیر فاروق
  • محسن زیدی محسن زیدی