Tabish Dehlvi's Photo'

تابش دہلوی

1911 - 2004 | کراچی, پاکستان

غزل 22

اشعار 5

شاہوں کی بندگی میں سر بھی نہیں جھکایا

تیرے لیے سراپا آداب ہو گئے ہم

  • شیئر کیجیے

چھوٹی پڑتی ہے انا کی چادر

پاؤں ڈھکتا ہوں تو سر کھلتا ہے

  • شیئر کیجیے

آئینہ جب بھی رو بہ رو آیا

اپنا چہرہ چھپا لیا ہم نے

  • شیئر کیجیے

ای- کتاب 6

چراغ صحرا

 

1982

غبار انجم

 

1984

حضرت محبوب الٰہی کا پیغام

 

1986

نیم روز

 

1988

تاب غزل

 

 

تقدیس

 

1985

 

ویڈیو 5

This video is playing from YouTube

ویڈیو کا زمرہ
کلام شاعر بہ زبان شاعر

تابش دہلوی

باغ میں جوشِ بہار آخر یہاں تک آ گیا

تابش دہلوی

سب نے مجھ ہی کو در_بدر دیکھا

تابش دہلوی

منزلوں کو نظر میں رکھا ہے

تابش دہلوی

کسی مسکین کا گھر کھلتا ہے

تابش دہلوی

شعرا متعلقہ

  • رسا چغتائی رسا چغتائی ہم عصر
  • علی سردار جعفری علی سردار جعفری ہم عصر
  • رئیس امروہوی رئیس امروہوی ہم عصر
  • خمارؔ بارہ بنکوی خمارؔ بارہ بنکوی ہم عصر
  • فانی بدایونی فانی بدایونی استاد
  • احسان دانش احسان دانش ہم عصر

شعرا کے مزید "کراچی"

  • اعجاز گل اعجاز گل
  • صابر وسیم صابر وسیم
  • محمد حنیف رامے محمد حنیف رامے
  • کوثر نیازی کوثر نیازی
  • انوار فطرت انوار فطرت
  • ممتاز گورمانی ممتاز گورمانی
  • عباس رضوی عباس رضوی
  • عباس دانا عباس دانا
  • ادیب سہارنپوری ادیب سہارنپوری
  • سرفراز شاہد سرفراز شاہد