توصیف تبسم

غزل 20

نظم 1

 

اشعار 10

پاؤں میں لپٹی ہوئی ہے سب کے زنجیر انا

سب مسافر ہیں یہاں لیکن سفر میں کون ہے

  • شیئر کیجیے

دل کی بازی ہار کے روئے ہو تو یہ بھی سن رکھو

اور ابھی تم پیار کرو گے اور ابھی پچھتاؤگے

شوق کہتا ہے کہ ہر جسم کو سجدہ کیجے

آنکھ کہتی ہے کہ تو نے ابھی دیکھا کیا ہے

اچھا ہے کہ صرف عشق کیجے

یہ عمر تو یوں بھی رائیگاں ہے

دیکھنے والی اگر آنکھ کو پہچان سکیں

رنگ خود پردۂ تصویر سے باہر ہو جائیں

کتاب 4

 

متعلقہ شعرا

"اسلام آباد" کے مزید شعرا

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI