Irfan Siddiqi's Photo'

عرفان صدیقی

1939 - 2004 | لکھنؤ, ہندوستان

اہم ترین جدید شاعروں میں شامل، اپنے نوکلاسیکی لہجے کے لیے معروف

اہم ترین جدید شاعروں میں شامل، اپنے نوکلاسیکی لہجے کے لیے معروف

غزل 74

اشعار 80

اٹھو یہ منظر شب تاب دیکھنے کے لیے

کہ نیند شرط نہیں خواب دیکھنے کے لیے

بدن میں جیسے لہو تازیانہ ہو گیا ہے

اسے گلے سے لگائے زمانہ ہو گیا ہے

رات کو جیت تو پاتا نہیں لیکن یہ چراغ

کم سے کم رات کا نقصان بہت کرتا ہے

  • شیئر کیجیے

کتاب 15

کینوس

 

1978

دریا

 

1999

عرفان صدیقی: شخص اور شاعر

 

2012

عرفان صدیقی: حیات، خدمات اور شعری کائنات

 

2015

عشق نامہ

 

1997

مالویکا اگنی متر

 

1983

مالویکا اگنی متر

 

1983

موج دریا

 

2005

محاورۂ جاں

 

 

رابطۂ عامہ

 

1977

تصویری شاعری 5

 

ویڈیو 6

This video is playing from YouTube

ویڈیو کا زمرہ
کلام شاعر بہ زبان شاعر

عرفان صدیقی

اٹھو یہ منظر_شب_تاب دیکھنے کے لیے

عرفان صدیقی

جب یہ عالم ہو تو لکھیے لب_و_رخسار پہ خاک

عرفان صدیقی

حلقۂ_بے_طلباں رنج_گراں_باری کیا

عرفان صدیقی

دھنک سے پھول سے برگ_حنا سے کچھ نہیں ہوتا

عرفان صدیقی

کوئی بجلی ان خرابوں میں گھٹا روشن کرے

عرفان صدیقی

آڈیو 24

انہیں کی شہ سے انہیں مات کرتا رہتا ہوں

اٹھو یہ منظر_شب_تاب دیکھنے کے لیے

بدن میں جیسے لہو تازیانہ ہو گیا ہے

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

متعلقہ فن کاروں

  • معراج فیض آبادی معراج فیض آبادی ہم عصر
  • افتخار عارف افتخار عارف ہم عصر

"لکھنؤ" کے مزید فن کاروں

  • شانتی ہیرانند شانتی ہیرانند