فگار اناوی

غزل 16

اشعار 33

دل ہے مرا رنگینیٔ آغاز پہ مائل

نظروں میں ابھی جام ہے انجام نہیں ہے

  • شیئر کیجیے

فضا کا تنگ ہونا فطرت آزاد سے پوچھو

پر پرواز ہی کیا جو قفس کو آشیاں سمجھے

  • شیئر کیجیے

کیا ملا عرض مدعا سے فگارؔ

بات کہنے سے اور بات گئی

  • شیئر کیجیے

ان پہ قربان ہر خوشی کر دی

زندگی نذر زندگی کر دی

  • شیئر کیجیے

ساقی نے نگاہوں سے پلا دی ہے غضب کی

رندان ازل دیکھیے کب ہوش میں آئیں

  • شیئر کیجیے

کتاب 1

حرف و نوا

 

2001

 

"اناو" کے مزید شعرا

  • رضا مورانوی رضا مورانوی
  • عزیز صفی پوری عزیز صفی پوری