Javed Shaheen's Photo'

جاوید شاہین

1922 - 2008 | لاہور, پاکستان

جاوید شاہین

غزل 56

نظم 14

اشعار 15

ڈوبنے والا تھا دن شام تھی ہونے والی

یوں لگا مری کوئی چیز تھی کھونے والی

جمع کرتی ہے مجھے رات بہت مشکل سے

صبح کو گھر سے نکلتے ہی بکھرنے کے لیے

خود بنا لیتا ہوں میں اپنی اداسی کا سبب

ڈھونڈ ہی لیتی ہے شاہیںؔ مجھ کو ویرانی مری

اجنبی بود و باش کے قرب و جوار میں ملا

بچھڑا تو وہ مجھے کسی اور دیار میں ملا

کچھ زمانے کی روش نے سخت مجھ کو کر دیا

اور کچھ بے درد میں اس کو بھلانے سے ہوا

کتاب 7

 

آڈیو 12

اجنبی بود_و_باش کے قرب_و_جوار میں ملا

اک جگہ ہوں پھر وہاں اک یاد رہ جانے کے بعد

پانی کا عجب طور تھا پانی سے نکل کر

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

"لاہور" کے مزید شعرا

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

بولیے