Jayant Parmar's Photo'

جینت پرمار

1955 | احمد آباد, انڈیا

ساہتیہ اکادمی انعام یافتہ، اردو میں دلت تجربے کو اظہار دینے والے پہلے شاعر

ساہتیہ اکادمی انعام یافتہ، اردو میں دلت تجربے کو اظہار دینے والے پہلے شاعر

جینت پرمار

غزل 5

 

نظم 10

اشعار 5

بستر پہ لیٹے لیٹے مری آنکھ لگ گئی

یہ کون میرے کمرے کی بتی بجھا گیا

دل کو دکھاتی ہے پھر بھی کیوں اچھی لگتی ہے

یادوں کی یہ شام سہانی دل میں قید ہوئی

ہر ایک شاخ کے ہاتھوں میں پھول مہکیں گے

خزاں کا پیڑ بھی کپڑے بدلنا چاہتا ہے

لمس کی وہ روشنی بھی بجھ گئی

جسم کے اندر اندھیرا اور ہے

جگنو تھا تارا تھا کیا تھا

دروازے پر کون کھڑا تھا

دوہا 6

آس بندھاتی ہے سدا سکھ کی ہوگی بھور

اپنے ارادوں کو ابھی مت کرنا کمزور

  • شیئر کیجیے

چاہت کی بھاشا نہیں شبدوں کو مت تول

خاموشی کا گیت سن چاند کی کھڑکی کھول

  • شیئر کیجیے

جاڑے کی رت ہے نئی تن پر نیلی شال

تیرے ساتھ اچھی لگی سردی اب کے سال

  • شیئر کیجیے

مانگ بھروں سندور سے سجوں سولہ سنگھار

جب تک پہنوں گی نہیں ان باہوں کا ہار

  • شیئر کیجیے

لاکھ چھپائے نہ چھپے ان راتوں کا بھید

آنکھوں کے آکاش میں پڑھے تھے چاروں وید

  • شیئر کیجیے

کتاب 9

 

آڈیو 5

اس نے مذاق سمجھا مرا دل دکھا گیا

جگنو تھا تارا تھا کیا تھا

چاند ان آنکھوں نے دیکھا اور ہے

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

متعلقہ شعرا

"احمد آباد" کے مزید شعرا

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

بولیے