Saghar Azmi's Photo'

ساغرؔ اعظمی

1944 - 2004 | بارہ بنکی, ہندوستان

غزل 8

اشعار 12

تم کیا جانو اپنے آپ سے کتنا میں شرمندہ ہوں

چھوٹ گیا ہے ساتھ تمہارا اور ابھی تک زندہ ہوں

  • شیئر کیجیے

کشمیر کی وادی میں بے پردہ جو نکلے ہو

کیا آگ لگاؤ گے برفیلی چٹانوں میں

اتنا ناراض ہو کیوں اس نے جو پتھر پھینکا

اس کے ہاتھوں سے کبھی پھول بھی آیا ہوگا

کتاب 1

کاغذ کا شہر

 

1987

 

ویڈیو 9

This video is playing from YouTube

ویڈیو کا زمرہ
کلام شاعر بہ زبان شاعر
Mushaira Saghar Azmi Ghazal HallaGulla Com Part 1

ساغرؔ اعظمی

Mushaira Saghar Azmi Ghazal HallaGulla Com Part 2

ساغرؔ اعظمی

Reciting own poetry

ساغرؔ اعظمی

Saghar Azmi - 2001 - Mumbai - Part - 01

ساغرؔ اعظمی

Saghar Azmi - 2001 - Mumbai - Part - 03

ساغرؔ اعظمی

Saghar Azmi - Lucknow Mahotsav

ساغرؔ اعظمی

Saghar Azmi 1

ساغرؔ اعظمی

Saghar Azmi 2

ساغرؔ اعظمی

پھولوں سے بدن ان کے کانٹے ہیں زبانوں میں

ساغرؔ اعظمی

آڈیو 3

پھولوں سے بدن ان کے کانٹے ہیں زبانوں میں

پیاس صدیوں کی ہے لمحوں میں بجھانا چاہے

رات کے اندھیروں کو روشنی وہ کیا دے_گا

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

 

متعلقہ شعرا

  • رئیس انصاری رئیس انصاری ہم عصر
  • انور جلال پوری انور جلال پوری ہم عصر
  • خمارؔ بارہ بنکوی خمارؔ بارہ بنکوی ہم عصر
  • شاعر جمالی شاعر جمالی ہم عصر
  • معراج فیض آبادی معراج فیض آبادی ہم عصر
  • کفیل آزر امروہوی کفیل آزر امروہوی ہم عصر
  • راحت اندوری راحت اندوری ہم عصر
  • منور رانا منور رانا ہم عصر
  • وسیم بریلوی وسیم بریلوی ہم عصر

"بارہ بنکی" کے مزید شعرا

  • بیدم شاہ وارثی بیدم شاہ وارثی
  • خمارؔ بارہ بنکوی خمارؔ بارہ بنکوی
  • علیم عثمانی علیم عثمانی
  • شمسی مینائی شمسی مینائی
  • نہال رضوی نہال رضوی