noImage

سہیل احمد زیدی

1930 - 2007 | الہٰ آباد, ہندوستان

غزل 21

اشعار 8

اک موج فنا تھی جو روکے نہ رکی آخر

دیوار بہت کھینچی دربان بہت رکھا

دو پاؤں ہیں جو ہار کے رک جاتے ہیں

اک سر ہے جو دیوار سے ٹکراتا ہے

  • شیئر کیجیے

دیکھو تو ہر اک شخص کے ہاتھوں میں ہیں پتھر

پوچھو تو کہیں شہر بنانے کے لیے ہے

ای- کتاب 3

نگاڑے حضور

 

1993

صنوبروں کا شہر

 

1964

وادیٔ طویٰ

 

1998

 

آڈیو 3

پیڑ اونچا ہے مگر زیر_زمیں کتنا ہے

فقیہ_شہر سے رشتہ بنائے رہتا ہوں

نواح_جاں میں کہیں ابتری سی لگتی ہے

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

 

مزید دیکھیے

شعرا کے مزید "الہٰ آباد"

  • افسر الہ آبادی افسر الہ آبادی
  • حیرت الہ آبادی حیرت الہ آبادی
  • رازؔ الٰہ آبادی رازؔ الٰہ آبادی
  • شبنم نقوی شبنم نقوی
  • احتشام حسین احتشام حسین
  • آنند نرائن ملا آنند نرائن ملا
  • فرخ جعفری فرخ جعفری
  • ساحل احمد ساحل احمد
  • عتیق الہ آبادی عتیق الہ آبادی
  • اجمل اجملی اجمل اجملی

Added to your favorites

Removed from your favorites