aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر
Tahir Adeem's Photo'

طاہر عدیم

1973 | جرمنی

طاہر عدیم

غزل 27

اشعار 7

فقط تم ہی نہیں ناراض مجھ سے جان جاناں

مرے اندر کا انساں تک خفا ہے انتہا ہے

مجھے وہ چھوڑ کر جب سے گیا ہے انتہا ہے

رگ و پے میں فضائے کربلا ہے انتہا ہے

رنگ کیا عجب دیا میری بے وفائی کو

اس نے یوں کیا کہ میرے خط جلائے عود میں

اسے بھی پردۂ تہذیب کو گرانا ہے

مجھے بھی پیکر نایاب سے نکلنا ہے

نہیں ہے رہنا اسے بھی بہار میں طاہرؔ

مجھے بھی موسم شاداب سے نکلنا ہے

Recitation

Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

GET YOUR PASS
بولیے