Akhtar Hoshiyarpuri's Photo'

اختر ہوشیارپوری

1918 - 2007 | راول پنڈی, پاکستان

معروف شاعر،اپنے نعتیہ کلام کے لیے بھی جانے جاتے ہیں، حکومت پاکستان کے اعزاز’ تمغۂ امتیاز ‘سے سرفراز

معروف شاعر،اپنے نعتیہ کلام کے لیے بھی جانے جاتے ہیں، حکومت پاکستان کے اعزاز’ تمغۂ امتیاز ‘سے سرفراز

اختر ہوشیارپوری

غزل 52

اشعار 47

کچے مکان جتنے تھے بارش میں بہہ گئے

ورنہ جو میرا دکھ تھا وہ دکھ عمر بھر کا تھا

لوگ نظروں کو بھی پڑھ لیتے ہیں

اپنی آنکھوں کو جھکائے رکھنا

  • شیئر کیجیے

اخترؔ گزرتے لمحوں کی آہٹ پہ یوں نہ چونک

اس ماتمی جلوس میں اک زندگی بھی ہے

نہ جانے لوگ ٹھہرتے ہیں وقت شام کہاں

ہمیں تو گھر میں بھی رکنے کا حوصلا نہ ہوا

میں نے جو خواب ابھی دیکھا نہیں ہے اخترؔ

میرا ہر خواب اسی خواب کی تعبیر بھی ہے

کتاب 2

 

"راول پنڈی" کے مزید شعرا

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

GET YOUR FREE PASS
بولیے