Faryad Aazar's Photo'

فریاد آزر

1956 - - | دلی, ہندوستان

غزل 7

اشعار 10

ادا ہوا نہ قرض اور وجود ختم ہو گیا

میں زندگی کا دیتے دیتے سود ختم ہو گیا

بند ہو جاتا ہے کوزے میں کبھی دریا بھی

اور کبھی قطرہ سمندر میں بدل جاتا ہے

جو دور رہ کے اڑاتا رہا مذاق مرا

قریب آیا تو رویا گلے لگا کے مجھے

اس تماشے کا سبب ورنہ کہاں باقی ہے

اب بھی کچھ لوگ ہیں زندہ کہ جہاں باقی ہے

میں اس کی باتوں میں غم اپنا بھول جاتا مگر

وہ شخص رونے لگا خود ہنسا ہنسا کے مجھے

کتاب 3

خزاں میرا موسم

 

1994

قسطوں میں گزرتی زندگی

 

2005

انتساب

فریاد آزر نمبر : شمارہ نمبر۔080

 

 

"دلی" کے مزید شعرا

  • مرزا غالب مرزا غالب
  • شیخ ظہور الدین حاتم شیخ ظہور الدین حاتم
  • شاہ نصیر شاہ نصیر
  • آبرو شاہ مبارک آبرو شاہ مبارک
  • بیخود دہلوی بیخود دہلوی
  • شیخ ابراہیم ذوقؔ شیخ ابراہیم ذوقؔ
  • تاباں عبد الحی تاباں عبد الحی
  • بہادر شاہ ظفر بہادر شاہ ظفر
  • محمد رفیع سودا محمد رفیع سودا
  • ظہیرؔ دہلوی ظہیرؔ دہلوی