Saima Esma's Photo'

صائمہ اسما

لاہور, پاکستان

غزل 8

نظم 8

اشعار 7

نہ جانے کیسی نگاہوں سے موت نے دیکھا

ہوئی ہے نیند سے بیدار زندگی کہ میں ہوں

کبھی کبھی تو اچھا خاصا چلتے چلتے

یوں لگتا ہے آگے رستہ کوئی نہیں ہے

آج سوچا ہے کہ خود رستے بنانا سیکھ لوں

اس طرح تو عمر ساری سوچتی رہ جاؤں گی

قطعہ 4

 

شعرا کے مزید "لاہور"

  • شاہین عباس شاہین عباس
  • رشید قیصرانی رشید قیصرانی
  • سلیم بیتاب سلیم بیتاب
  • زکریا شاذ زکریا شاذ
  • ندیم بھابھہ ندیم بھابھہ
  • نور بجنوری نور بجنوری
  • سرفراز زاہد سرفراز زاہد
  • حمیدہ شاہین حمیدہ شاہین
  • حمیرا راحتؔ حمیرا راحتؔ
  • خاور اعجاز خاور اعجاز