Ameer Minai's Photo'

امیر مینائی

1829 - 1900

داغ دہلوی کے ہم عصر۔ اپنی غزل ’ سرکتی جائے ہے رخ سے نقاب آہستہ آہستہ‘ کے لئے مشہور ہیں

داغ دہلوی کے ہم عصر۔ اپنی غزل ’ سرکتی جائے ہے رخ سے نقاب آہستہ آہستہ‘ کے لئے مشہور ہیں

غزل 42

اشعار 116

کشتیاں سب کی کنارے پہ پہنچ جاتی ہیں

ناخدا جن کا نہیں ان کا خدا ہوتا ہے

  • شیئر کیجیے

الفت میں برابر ہے وفا ہو کہ جفا ہو

ہر بات میں لذت ہے اگر دل میں مزا ہو

  • شیئر کیجیے

کون سی جا ہے جہاں جلوۂ معشوق نہیں

شوق دیدار اگر ہے تو نظر پیدا کر

where in this world does ones beloved's beauty not reside

if the zeal for sight you have, the vision too provide

where in this world does ones beloved's beauty not reside

if the zeal for sight you have, the vision too provide

  • شیئر کیجیے

ای- کتاب 34

امیر مینائی

 

1941

امیر و داغ کے کلام کا انتخاب

 

1943

امیر و داغ کی نازک خیالیاں

 

 

امیراللغات

حصہ۔001

1891

امیراللغات

حصہ۔ 002

1892

دبدبہ امیری

 

1937

دبدبۂ امیری

 

 

دبستان امیر مینائی

 

1985

دیوان امیر

 

1893

دیوان امیر

 

1988

تصویری شاعری 16

ویڈیو 9

This video is playing from YouTube

ویڈیو کا زمرہ
دیگر ویڈیو
Na shauq e wasal ka da_wa

محمد رفیع

اس کی حسرت ہے جسے دل سے مٹا بھی نہ سکوں

متفرق

اے ضبط دیکھ عشق کی ان کو خبر نہ ہو

نامعلوم

سرکتی جائے ہے رخ سے نقاب آہستہ آہستہ

جگجیت سنگھ

آڈیو 7

جب سے باندھا ہے تصور اس رخ_پر_نور کا

ہنس کے فرماتے ہیں وہ دیکھ کے حالت میری

اچھے عیسیٰ ہو مریضوں کا خیال اچھا ہے

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

شعرا متعلقہ

  • دل شاہجہاں پوری دل شاہجہاں پوری شاگرد
  • میر مہدی مجروح میر مہدی مجروح ہم عصر
  • وسیم خیر آبادی وسیم خیر آبادی شاگرد
  • جلیل مانک پوری جلیل مانک پوری شاگرد
  • ریاضؔ خیرآبادی ریاضؔ خیرآبادی شاگرد
  • داغؔ دہلوی داغؔ دہلوی ہم عصر
  • مظفر علی اسیر مظفر علی اسیر استاد
  • اسیر لکھنوی اسیر لکھنوی استاد

Added to your favorites

Removed from your favorites